فلسطینی لوگ اپنے تباہ حال گھروں کے کھنڈرات پر بیٹھے آنےوالے وقت میں یروشلم کے بارے میں کیا سوچ رہے ہیں‌؟

فلسطینی لوگ اپنے تباہ حال گھروں کے کھنڈرات پر بیٹھے آنےوالے وقت میں یروشلم کے بارے میں کیا سوچ رہے ہیں‌؟

بی کیونیوز! فلسطینی لوگ اپنے تباہ حال گھروں کے کھنڈرات پر بیٹھے آنےوالے وقت میں یروشلم کے بارے میں کیا سوچ رہے ہیں‌؟ غزہ کی پٹی میں اسرائیل اور فلسطینی مسلح گروہوں کے مابین جنگ بندی کا معاہدہ ہوگیا ہے۔ گیارہ روز تک جاری رہنے والی اس جنگ سے غزہ کی بہت زیادہ تب۔اہی ہوئی ہے غزہ پر اسرائیل کی بم۔باری سے کم از کم 243 فلسطینی شہ۔ید ہوگئے۔ جن میں 66 بچے بھی شامل ہیں اور ایک غریب علاقے میں فلسطین نے بے تحاشا تباہی مچائی ہے۔ اب ان حالات میں غزہ میں لوگ کیا سوچتے اور خیال کرتے ہیں‌ اس حوالے سے

ملا جلا رد عمل ہےفلسطینی نوجوان لڑکی ہانیہ نے کہا کہ یروشلم کے لیے آنے وقتوں میں اور بھی بڑی لڑائیاں ہوسکتی ہیں۔ لہذا یروشلم کے لئے جنگ لڑنے کا خیال اب بھی لوگوں کے اندر ہے۔ لیکن اس فتح پر وہ خوشیاں منا رہے ہیں۔ وہ گذشتہ 11 دنوں کی تباہی کو بھی یاد کررہے ہیں۔ غزہ کے پورے گھر ایسے ہیں جو تباہ ہوگئے ہیں۔ ہمارے پاس تازہ ترین اعداد و شمار یہ ہیں کہ ایک ہزار افراد کے مکانات مکمل طور پر تباہ ہوچکے ہیں۔ 700 کو شدید نقصان پہنچا ہے ، اور مزید 14،000 گھریلو یونٹوں کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ اس شہر اور پٹی میں ہر گھر میں تقریبا چھ سے زیادہ افراد کا تناسب ہے۔ جو 80،000 سے زیادہ افراد ہیں جنہوں نے اپنے گھروں کو کھو دیا ہے یا اپنے گھروں کو شدید یا جزوی طور پر نقصان پہنچا ہے۔ لیکن اس سب کے باوجود فسطینی اپنے عزم کو جوان کیے ہوئے ہیں‌اور وہ مشکل وقت میں بھی اپنی زمین کے لیے لڑنے کے لیے تیار ہیں۔

Leave a Comment