قبرمیں سوالات کی ناکامی کے بعد مردے پرکون کونسےعذاب مسلط کیے جائیں گے

قبرمیں سوالات کی ناکامی کے بعد مردے پرکون کونسےعذاب مسلط کیے جائیں گے

بی کیونیوز! نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا پھر اس کو ہتھوڑے کے ساتھ مارا جائے گا ایسا ہتھوڑا کہ اگر اسے پہاڑ پر مارا جائے تو وہ اس پہاڑ کو ریزہ ریزہ کر دے پھر اسے زمین میں ستر ہاتھ نیچے تک دھنسا دیا جائے گا۔ وَيُضَيَّقُ عَلَيْهِ قَبْرُهُ حَتَّى تَخْتَلِفَ فِيهِ أَضْلَاعُهُ اور اس پر اس کی قبر اتنی تنگ کردی جائے گی کہ اس کی دونوں طرف کی پسلیاں بھی آپس میں پیوست ہوجائیں گی فَيُنَادِي مُنَادٍ مِنَ السَّمَاءِ أَنْ كَذَبَ، فَأَفْرِشُوا لَهُ مِنَ النَّارِ، وَافْتَحُوا لَهُ بَابًا إِلَى النَّارِ. فَيَأْتِيهِ مِنْ حَرِّهَا وَسَمُومِهَا

اللہ تعالی کہیں گے اس بندے نے جھوٹ بولا ہے پس اس کے لئے آگ کا بچھونا لگاؤ اور جہنم کی طرف اس کا دروازہ کھول دو پھر وہ جہنم کی گرمی محسوس کرے گا جہنمیوں کی چیخ و پکار اور آوازوں کو سنے گا ایک بد صورت آدمی کی تشریف آوری۔ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا وَيَأْتِيهِ رَجُلٌ قَبِيحُ الْوَجْهِ، قَبِيحُ الثِّيَابِ، مُنْتِنُ الرِّيحِ ایک انتہائی بدشکل، بدصورت، گندے لباس والا بدبودار آدمی اس کے پاس آئے گا (ایسا بدصورت ہو گا کہ آنکھ اس کی طرف دیکھ نہیں سکے گی اور ایسا بدبودار ہوگا کہ اس کی بد بو سونگھی نہیں جائے گی)
فَيَقُولُ : وہ کہے گا أَبْشِرْ بِالَّذِي يَسُوءُكَ تجھے ہر اس چیز کی بشارت ہو جو تجھے بری لگتی ہے یعنی اس وقت تو جو تکلیف اور عذاب دیکھ رہا ہے اس سے بھی بڑی تکلیف اور برا عذاب تیرے پاس آنے والا ہے تجھے قبر میں ہتھوڑا لگا ہے لیکن یہ کچھ بھی نہیں ہے تجھے قبر میں دبایا گیا ہے کہ تیری پسلیاں ایک دوسرے میں مل گئی ہیں لیکن یہ کچھ بھی نہیں ہے تو نے جہنم دیکھ لی ہے اس کی گرمی بھی محسوس کر لی ہے اس کی بد بو بھی تجھ تک پہنچ چکی ہے لیکن یہ سب کچھ بھی نہیں ہے تیرے پاس اس سے بھی بڑا عذاب آنے والا ہے
أَبْشِرْ بِالَّذِي يَسُوءُكَ اور یہ وہی دن ہے کہ جس کا تجھ سے وعدہ کا جاتا تھا فَيَقُولُ : وہ اس کی طرف دیکھ کر کہے گا
مَنْ أَنْتَ فَوَجْهُكَ الْوَجْهُ يَجِيءُ بِالشَّرِّ ؟ تو کون ہے؟ تیرا چہرہ تو ایسا چہرہ ہے جو شرّ کے ساتھ آتا ہے؟
فَيَقُولُ : أَنَا عَمَلُكَ الْخَبِيثُ. وہ کہے گا میں تیرا برا عمل ہوں میں تیرے لیے کوئی اجنبی نہیں ہوں تیرے ہی ہاتھوں کا کیا ہوا عمل ہوں وہی زنا جو تو کیا کرتا تھا وہ شراب جو تو پیا کرتا تھا وہی جو تو باطل طریقے سے لوگوں کے مال کھایا کرتا تھا وہی جو تو کمزوروں پر ظلم کیا کرتا تھا وہی جو تو اپنے والدین کی نافرمانی کیا کرتا تھا وہی جو تو نماز کے وقت سویا رہتا تھا وہی جو تو لوگوں کو قتل کیا کرتا تھا وہی جو تو شریعت کے خلاف حکم دیا کرتا تھا وہی جوتو امر بالمعروف اور نہی عن المنکر سے خاموش رہا کرتا تھا وہی تیری غیبت وہی تیری چغلی انا عملک الخبیث میں تیرا وہی خبیث عمل ہوں قبر میں اس کی خواہش

فَيَقُولُ : ۔ وہ قبر والا کہے گا رَبِّ لَا تُقِمِ السَّاعَةَ “. اے میرے رب! قیامت قائم نہ کرنا یہ بات وہ اس وجہ سے کہے گا کہ وہ وہ جہنم میں اپنا عذاب دیکھ چکا ہوگا یہ مکمل واقعہ مسند احمد اور سنن ابی داؤد میں موجود ہے حكم الحديث: إسناده صحيح رجاله رجال الصحيح اے مسلمانو یہ ہیں لوگوں کے ان کی قبروں میں پیش آنے والے حالات اگر مردے بات کریں اور تم ان کی چیخ و پکار کو سن سکو اور اگر تم قبروں کی زیارت کرو اگر آپ بادشاہوں سرداروں اور بڑوں کے جنازے دیکھو جب کہ وہ اپنی زندگی میں بڑی عزت دولت اور شان و شوکت میں رہا کرتے تھے جب کہ اب وہ کیڑوں مکوڑوں اور حشرات الارض کی خوراک بن چکے ہیں اگر آج وہ بول سکیں اور اپنی قبروں سے کھڑے ہو سکیں اور اپنے کفن اتار سکیں اور اللہ تعالی ان کو اجازت دے کہ وہ لوگوں کے ساتھ بات کریں تو ان میں سے کوئی بھی آپ کو زنا اور شراب خوری کا حکم نہیں دے گا اور نہ ہی یہ کہیں گے کہ اے جوانو موج مستی کرو بلکہ وہ نماز پڑھنے کا کہیں گے وہ کہیں گے دنیا سے فائدہ اٹھاؤ لیکن اللہ کی ملاقات کو مت بھولو ہم اللہ تعالی سے دعا کرتے ہیں کہ اللہ تعالی ہماری ہمارے والدین کی اور تمام مسلمانوں کی آخرت اور قبر بہتر فرمائے

Leave a Comment