میدان عرفات میں مسجد نمرہ سے خطبہ حج دیتے ہوئے امام کعبہ نے کہا کہ آپس میں عداوت اور نفرت کو ختم کرو اور اللہ کی رضا کے لیے ایک دوسرے کو معاف کر دو

میدان عرفات میں مسجد نمرہ سے خطبہ حج دیتے ہوئے امام کعبہ نے کہا کہ آپس میں عداوت اور نفرت کو ختم کرو اور اللہ کی رضا کے لیے ایک دوسرے کو معاف کر دو

بی کیونیوز! امام کعبہ شیخ بندر بن عبدالعزیز نے کہا ہے کہ آپس میں مساوات اور ہمدردی کے تعلقات قائم کرو، عاقبت مومنین کے لیے ہے، اللہ کسی کی محنت ضائع نہیں کرتا، اللہ کی عبادت کرو اور والدین کے ساتھ احسان کرو۔ معاشرے میں مساوات قائم کرو، آپس میں عداوت اور نفرت کو ختم کرو، اللہ کی رضا کے لیے ایک دوسرے کو معاف کرو، اللہ سے ڈرتے رہو اور اپنی نمازوں کی حفاظت کرو اور اپنے وعدوں کو اللہ کی رضا کے لیے پورا کرو۔ اللہ زمین پر فساد کرنے والوں کو پسند نہیں کرتا، اللہ کی رحمت سے

وہی مایوس ہوتا ہے جو گمراہ ہو چکا ہو، اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لو اور تفرقے میں نہ پڑو، میدان عرفات میں مسجد نمرہ سے خطبہ حج دیتے ہوئے امام کعبہ نے کہا کہ اللہ نے فرمایا میرے سوا کسی کو نہ پکارو اور کسی کو شریک نہ ٹھہراؤ، رسول ۖنے فرمایا، تم زمین والوں پر رحم کرو، اللہ تم پر رحم فرمائے گا، امت کو چاہیے ایک دوسرے سے شفقت کا معاملہ رکھے، اللہ کی رحمت سے وہی مایوس ہوتا ہے جو گمراہ ہو چکا ہو، اللہ کریم نے کہا میری رحمت میرے عذاب پر غالب ہے، رسول نے فرمایا، جنت میں اللہ کے رحم و فضل کے بغیر کوئی داخل نہیں ہو گا۔امام کعبہ نے خطبہ حج میں کہا کہ اللہ نے جیسے تم پر احسان کیا ویسے تم لوگوں پر کرو، اللہ کی رحمت احسان کرنے والوں کے قریب ہے، اللہ نے والدین کے ساتھ بھلائی کا راستہ اختیار کرنے کا حکم دیا، اللہ کا حکم ہے کہ والدین کے بعد رشتے داروں سے اچھا رویہ اختیار کرو، رسولۖنے فرمایا اپنے ملازمین کے ساتھ احسان کا معاملہ اختیار کرو۔ تمارے لئے کتاب کو بھیجا گیا ہے تاکہ تم ہدایت پاؤ اور اللہ جسے چاہتا ہے ہدایت دے دیتا ہے، اپنے نفس کا تزکیہ کرو اور تقویٰ اختیار کرو، اپنے رب کی ایسے عباد ت کرو جیسے اللہ تمہیں دیکھ رہا ہے۔ امام کعبہ نے کہا کہ اللہ زمین پر فساد کرنے والوں کو پسند نہیں کرتا، قرآن میں فرمایا گیا ہے کہ اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لو اور تفرقے میں نہ پڑو، آپس میں ہمدردی کے تعلقات قائم کرو اور عداوت و نفرت کو ختم کرو، معاشرے میں مساوات قائم کرو، اللہ کی رضا کے لیے ایک دوسرے کو معاف کرو۔امام کعبہ کا کہنا تھا کہ اللہ سے ڈرتے رہو اور اپنی نمازوں کی حفاظت کرو اور اپنے وعدوں کو اللہ کی رضا کے لیے پورا کرو، اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ شیطان تمہیں گمراہ کرنے کی کوشش کرے گا، اگر اللہ کا فضل نہ ہوتا تو سب شیطان کی ہی اتباع کرتے، رسول ۖنے فرمایا، جنت میں اللہ کے رحم و فضل کے بغیر کوئی داخل نہیں ہو گا.

Leave a Comment