نمازوترکی تیسری رکعت میں دعائےقنوت پڑھتےہوئےہم اللہ تعالٰی سےکون کونساعہدکرتےہیں؟

نمازوترکی تیسری رکعت میں دعائےقنوت پڑھتےہوئےہم اللہ تعالٰی سےکون کونساعہدکرتےہیں؟

بی کیو نیوز! نمازوترکی تیسری رکعت میں دعائےقنوت پڑھتےہوئےہم اللہ تعالٰی سےکون کونساعہدکرتےہیں؟ نماز عشاء کے وتر میں ہم ہر روز الله سے ایک وعدہ کرتے ہیں اور وہ وعدہ بھی عبادت کی سب سے آخری ایک رکعت میں ہوتا ہے۔ دعائے قنوت ایک عہد ہے الله سبحانہ و تعالی کے ساتھ ایک معاھدہ ہےاورایک وعدہ ہے۔ الّٰلھُمَّ اِنَّا نَسْتَعِیْنُکَ .. اے الله! ہم صرف تجھ ہی سے مدد مانگتے ہیں۔ وَنَسْتَغْفِرُکَ .. اور تیری مغفرت طلب کرتے ہیں۔ وَنُؤْمِنُ بِکَ .. اورتجھ پر ایمان

لاتے ہیں۔ وَنَتَوَکَّلُ عَلَیْکَ .. اور تجھ پر ہی توکل کرتے ہیں۔ وَنُثْنِیْ اِلَیْکَ الْخَیْر… اور تیری اچھی تعریف کرتے ہیں۔ وَنَشْکُرُکَ …اور ہم تیرا شکر ادا کرتے ہیں۔ ولا نَکْفُرُکَ … اور ہم تیرا انکار نہیں کرتے۔ وَنَخْلَعُ … اور ہم الگ کرتے ہیں۔ وَنَتْرُکَ مَنْ یّفْجُرُکَ … اور ہم چھوڑ دیتے ہیں اس کو جو تیری نا فرمانی کرے۔ اللھُمَّ ایّاکَ نَعْبُدُ … اے الله! ہم خاص تیری ہی عبادت کرتے ہیں۔ وَلَکَ نُصَلّیْ …اور تیرے لئے نماز پڑھتے ہیں۔ وَنَسْجُدُ … اور ہم تجھے سجدہ کرتے ہیں۔ وَاِلَیْکَ نَسْعٰی … اور ہم تیری طرف دوڑ کر آتے ہیں۔ وَنَحْفِدُ … اور ہم تیری خدمت میں حاضر ہوتے ہیں۔ وَ نَرْجُوا رَحْمَتَکَ… اور ہم تیری رحمت کی امید رکھتے ہیں۔ وَنَخْشٰی عَذَابَکَ … اور ہم تیرے عذاب سے ڈرتے ہیں۔ انّ عَذَابَک بِالْکُفّارِ مُلْحِقْ … بے شک تیرا عذاب کافروں کو پہنچنے والا ہے. کبھی کبھی کچھ باتیں بڑی دیر سے پتہ چلتی ہیں. یا شایدپتاتو ہوتی ہیں. لیکن ان کی اصل سے ان کے راز سے واقف ہونے کا بھی کوئی وقت کوئی لمحہ ہوتا ہے۔ سارا علم کتابوں میں تو نہیں ہوتا نا کچھ دلوں پر اترتا ہے۔ دل بھی وہ جو الله کے نور اور اس کے رسول صلی الله علیہ وسلم کی محبت سے بھرے ہوں۔ سادہ سے، ریا سے پاک ہوں، جو الله کے حکم کا سنتے ہی کوئی دلیل نہ مانگیں. بس آمنّا اور صدّقنا کہہ دیں۔ یہ تو واقعی ہم ہر روز الله سبحانہ وتعالی سےسونے سے پہلے وعدہ کرتے ہیں. اورہم کتنے نادان ہیں جوصبح ہوتے ہی سب کچھ بُھلا دیتے ہیں۔ کیا ہم حقیقتا جانتے ہیں کہ نماز وتر دعائے قنوت الله سبحانہ تعالی سے ایک وعدہ ہے، ایک معاھدہ ہے اور کیا ہم اسے پورا کرتے ہیں؟ یا پورا کرنے کے بارے میں سوچتے ہیں؟

Leave a Comment