نماز کےبعدجائےنمازکاکوناموڑنا کیاجائزہے؟کیاشیطان واقعی نمازپڑھتاہے؟ جا نئےقرآن پاک میں اس بارےمیں کیاارشادہے؟

بی کیو نیوز! نماز کےبعدجائےنمازکاکوناموڑنا کیاجائزہے؟کیاشیطان واقعی نمازپڑھتاہے؟ جا نئےقرآن پاک میں اس بارےمیں کیاارشادہے؟ اکثردیکھا گیا ہے کہ کچھ مرد اوراکثر خواتین نماز پڑھنے کے بعد اور اٹھنے سے پہلےجائے نماز کو ایک کونے سے موڑ دیتی ہیں. وہ ایسا کیوں کرتی ہیں؟ جب پوچھا تومرد عموماً کوئی مدلل جواب نہیں دیتے کہتے ہیں بس ایسے ہی عادت ہے. اوراکثر وہی جواب ملا جو ہم اپنی نانیوں، دادیوں سے سنتے آئے ہیں. کہ اگر کونا نہ موڑو تو شیطان

نماز پڑھنے لگتا ہے. کتنی عجیب بات ہے. وہ شیطان جو ایک سجدہ کرنے کو تیار نہ ہوا. وہ بھلا ابکیوں نماز پڑھنے لگا؟ اگر اس نے اب سجدے کرنے ہوتے تو پہلے سجدے سے انکار ہی کیوں کرتا. اِسی لیے تو وہ راندہ درگاہ کر دیا گیا اور اگر چلیں فرضِ محال ایک منٹ کو مان بھی لیتے ہیں. کہ وہ نماز پڑھتا بھی ہے. تو یہ تو اچھی بات ہے، پڑھنے دیں. آپ کا کیا جاتا ہے. اللہ تعالی قران پاک میں فرماتا ہے يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا اجْتَنِبُوا كَثِيرًا مِنَ الظَّنِّ إِنَّ بَعْضَ الظَّنِّ إِثْمٌ ۖاے ایمان والو! بہت بدگمانیوں سے بچو یقین مانو کہ بعض بدگمانیاں گناه ہیں۔ (سورة الحجرات) ایسی کتنی ہی سینہ بہ سینہ توہمات ہمارے آباو اجداد سے چلتے چلتے ہم تک پہنچتی ہیں۔ جن میں سے کسی کو بھی تاریخ اسلام میں کوئی اہمیت حاصل نہیں ہے. لیکن افسوس ہے کہ وہ ہمارے مسلم گھرانوں میں بڑی شدت سے اپنائی جاتی ہیں۔ مثلاًقینچی خالی نہ چلاؤ- جھگڑا ہوگا. خالی جھولا نہ جھلاو- بچہ نہیں ہوگا یا نومولود بچے کو نقصان ہوگا. جھاڑو سے نہ مارو. سوکھے کی بیماری ہو جائے گی. کالی بلی راستہ کاٹ جائے تو کہتے ہیں کچھ برا ہو جائے گا. فوراً الٹے پاؤں واپس آ جاؤ یا راستہ بدل لووغیرہ وغیرہ. جب کہ دین اسلام ، قران و حدیث میں ایسی توہمات کا کہیں ذکر نہیں ملتا. الله کیلئے اپنے گھروں کو دِین محمد ﷺ کی تعلیمات سے آراستہ کیجئے. نہ کہ دقیانوسی توہمات اپنا کر خوامخواہ اپنی زندگی کو مشکل بنائے رکھیں.

Leave a Comment