کیا آپ جانتے ہیں سلطان صلاح الدین ایوبی رحمتہ اللہ علیہ کون تھے؟

کیا آپ جانتے ہیں سلطان صلاح الدین ایوبی رحمتہ اللہ علیہ کون تھے؟

بی کیونیوز! صلاح الدین ایوبی رحمتہ اللہ علیہ افکار و نظریات سے استفادہ کیا جا رہا ہے. سلطان صلاح الدین ایوبی رحمتہ اللہ علیہ کا اصل نام یوسف تھا. آپ رحمۃ اللہ علیہ کے والد کا نام نجم الدین ایوب تھا. اسی نسبت سے انہیں یوں بھی کہا جاتا ہے آپ رحمتہ اللہ علیہ کے والد موصل کے حکمران عماد الدین زنگی کے ملازم تھے. آپ رحمتہ اللہ علیہ نے 1138میں پیدا ہوئے اپنے نڈر اور منطقی انسان تھے آ.پ رحمۃ اللہ علیہ نے عالم اسلام کے نام مجاہد اور عظیم سپہ سالار تھے. آپ رحمتہ اللہ علیہ نے پہلے مسلمان

حکمران تھے جنھوں نے یورپ کے عیسائیوں کو شکست دے کر بیت المقدس فتح کیا، بیت المقدس پر مسلمانوں اس طرح 90 سال کے بعد بیت المقدس پر مسلمانوں کا دوبارہ قبضہ ہوگیا. سلطان صلاح الدین ایوبی رحمتہ اللہ علیہ شجاعت اور استقلال کا پیکر تھے. آپ حکمران ہوتے ہوئے بھی فقیرانہ زندگی گزارتے تھے. آپ رحمتہ اللہ علیہ کے وقت مصر شام بحرین یمن اور افریقہ کے بعد صوبوں کے حکمران تھے. لیکن ایک خیمے میں رہتے تھے. وہ ایمان کے لئے محل سے کم نہ تھا آپ سے زیادہ گھوڑے پر بیٹھنا پسند کرتے تھے. درباریوں سے زیادہ اپنے مجاہدین میں رہنا پسند تھا آپ رحمتہ اللہ علیہ کے بہادر سپاہی لائک جنرل اور انتھک فرماں بردار تھے. سلطان صلاح الدین ایوبی بے حد فیاض، احسان کرنے والے، عفو و درگزر سے کام لینے والے اور حلیم و بردبار تھے. اللہ نے اپنے وسیع سلطنت میں غریبوں اور مسکینوں کے لیے لنگر خانے مدارس اور شفاخانے قائم کر رکھے تھے. کہتے ہیں کہ جو صلاح الدین کی سلطنت ترقی کرتی گئی. تو ان کی فیاضی بھی بڑھتی گئی. ان کی وفات پر ان کے خزانے میں صرف 39 درہم تھے. کوئی باغ مکان حویلیاں زمین کی ملکیت نہ تھی ان کی فیاضی کا یہ حال تھا کہ حکمران ہونے کے باوجود ساری زندگی زکوۃ کی ادائیگی کے لیے صاحب نصاب نہ بنے قرآن مجید کے سنتے ہی ٹوٹ پھوٹ کر رو پڑھتے تھے. اسی طرح یتیم و بیوہ اور بے سہاروں کا خاص خیال رکھتے تھے. الغرض سلطان صلاح الدین ایوبی رحمتہ اللہ علیہ نام مجاہد جنرل تھے. بلکہ عالم اسلام کے .مالک اور حکمران بھی تھے. آپ نے پچپن برس کی عمر میں وفات پائی

Leave a Comment