مرد کی پسلی سےعورت کوبناکراللہ تعالیٰ نے اپنی کس حکمت کی طرف اشارہ دیا ہے؟

عورت کو مرد کی پسلی سے بنا کر

بی کیو نیوز! ﻣﺮﺩ ﮐﯽ ﭘﺴﻠﯽ ﺳﮯ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﻮﺑﻨﺎ ﮐﮯ ﺍﻟﻠﮧ تعالیٰ ﻧﮯ ﻣﺮﺩ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﯽ ﺍﺱﺣﮑﻤﺖ ﮐی طرف ﺍﺷﺎﺭﮦ ﺩے دیا ہےﮐﮧ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﯽ ﺗﺨﻠﯿﻖ ﻓﺮﺷﺘﻮﮞ ﮐﯽ ﻻﺋﯽ ہوئی ﻣﭩﯽ ﺳﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯽ بلکہ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍﺳﮯ ﺗﻤﮭﺎﺭﮮ ﺟﺴﻢ ﮐﮯ ﺣﺼﮯ ﺳﮯ ﺍﺱ ﻟﯿﮯ ﻧﮑﺎﻻ ﮐﮧ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﺎ ﺗﻘﺪﺱ ﺍﻭﺭ ﭘﺮﺩﮦ ﻗﺎﺋم رہے۔ فرﺷﺘﻮﮞ ﮐﻮ ﺑﮭﯽ ﺧﺒﺮ ﻧﮧ ﮨﻮﻧﮯ ﭘﺎﺋﮯ ﮐﮧ ﺯﻣﯿﻦ ﮐﯽ ﻻﺋﯽ ﮨﻮﺋﯽﮐﺲ ﻣﭩﯽ ﺳﮯ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﯽ ﺗﺨﻠﯿﻖﮨﻮﺋﯽ ہے ﯾﻌﻨﯽ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﮯ ﺗﻘﺪﺱﮐﯽ ﺣﺪ ﺗﻮ ﺩﯾﮑﮭﯿﮟ ﮐﮧ ﻓﺮﺷﺘﻮﮞ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺍﺳﮑﯽ ﺑﻨﺎﻭﭦ

ﮐﺎ ﭘﺮﺩﮦ ﻻﺯﻣﯽ ﻗﺮﺍﺭ دے ﺩﯾﺎ ﮔﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﭘﮩﻠﯽ ﻋﻮﺭﺕ ﺍﺳﯽ ﻣﺮﺩ ﮐﯽ ﭘﺴﻠﯽ ﺳﮯ ﻧﮑﻠﯽﺟﺲ ﮐﯽ ﻭﮦ ﻣﻨﮑﻮﺣﮧ ﮐﮩﻼﺋﯽ۔ ﺍﺏ ﺑﺎﺕ ﺁﺗﯽ ﮨﮯ ﭘﺴﻠﯽ سے ہی ﮐﯿﻮﮞ ﻧﮑﻠﯽ؟ ﮐﯿﺎ ﭨﯿﮍﮬﺎ ﭘﻦ ﻭﮨﺎﮞ ﺳﮯ ﻣﻼ ؟ ﻧﮩﯿﮟ ﯾﮩﺎﮞ ﺑﮭﯽ ﺣﮑﻤﺖ ﺳﮯﺧﺎﻟﯽ ﺑﺎﺕ ﻧﮩﯿﮟ۔ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﺟﺴﻢ ﻣﯿﮟ ﺩﻝ ﺍﻭﺭ ﺑﮩﺖ ﺳﮯ ﻧﺎﺯﮎ حصّے ﭘﺴﻠﯽ ﮐﮯ ﭘﯿﭽﮭﮯ ﭼﮭﭙﮯ ہوئے ہیں ﯾﻌﻨﯽ ﭘﺴﻠﯽ ﺍﯾﮏ ﮈﮬﺎﻝ ﮨﮯﺍﻥ ﻧﺎﺯﮎ حصوں ﮐﮯ ﻟﯿﮯ۔ ﺗﻮ ﺍﻟﻠﮧ ﭘﺎﮎ ﻧﮯ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﻮﭘﺴﻠﯽ ﺳﮯ ﻧﮑﺎﻝ ﮐﮯ ﯾﮧ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺘﺎﯾﺎ ﮐﮧ ﻋﻮﺭﺕ ﻣﯿﮟ ﭨﯿﮍﮬﺎ ﭘﻦ ﮨﮯﺑﻠﮑﮧ ﺍﺱ ﻧﮯ ﻋﻮﺭﺕ ﮐﻮ ﭘﺴﻠﯽﺳﮯ ﺗﺨﻠﯿﻖ ﮐﺮ ﮐﮯ ﯾﮧ ﺑﺎﺕﺳﻤﺠﮭﺎ ﺩﯼ ہےﮐﮧ ﻋﻮﺭﺕ ﻭﻗﺖ آﻧﮯ ﭘر ﮈﮬﺎﻝ ﺑﮭﯽ ﺑﻦ ﺳﮑﺘﯽ ﮨﮯ۔ ﻋﻮﺭﺕ ﻣﺎﮞ ﺑﮩﻦ ﺑﯿﭩﯽ ﺍﻭﺭ ﺑﯿﻮﯼﺑﮭﯽ ﮨﮯﮐﺴﯽ ﮐﯽ ﻋﺰﺕ ﮐﻮ ﻣﺖ ﺍﭼﮭﺎﻟﯿﮟ ﺟﺘﻨﺎ ﮨﻮ ﺳﮑﮯ ﮨﺮ ﺑﺎﺕ ﻣﯿﮟ ﻣﺜﺒﺖ ﭘﮩﻠﻮ ﺗﻼﺵ ﮐﺮﯾﮟ۔ ﻣﻨﻔﯽ ﭘﮩﻠﻮ ﻧﮑﺎﻝ ﮐﮯ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﯽ ﺗﺨﻠﯿﻖ ﺍﻭﺭ بنائی ہوئی ﭼﯿﺰﻭﮞ ﮐﺎ ﻣﺬﺍﻕ ﻧﮧ ﺑﻨﺎﺋﯿں.

اپنی رائے کا اظہار کریں