What is Universe

This post contains Urdu and English.

Every human has a natural inclination to ask certain questions about the purpose of life and universe:
What are we doing here?
What is the purpose of universe?
What is the purpose of life?
Is there a Creator?

What is universe?
Did this all appear by chance?
Until these questions are answered, human’s soul can never find peace and life will seem to be meaningless.

The Qur’an invites:

The Qur’an invites man to travel the earth, make his own observations and reflect on how creation was originated:
“Say [O Muhammad], ‘Travel through the land and observe how He began creation. Then Allah will produce the final creation. Indeed Allah, over all things, is competent.’
(Qur’an 29: 20)

Just by reflecting on the vast and wonderful creation around us, every single human being can sit and come to the conclusion that there must be one designer, one Creator to this magnificent universe.
Who Create the Universe and design all of this? What about the earth, where you stand upon, every one of the laws of biology, chemistry and physics, from the fundamental forces such as gravity and upthrust, to the structure of the atoms and elements that have been precisely tailored to make life possible?

Earth & Galaxy,

Look at the Earth within the solar system, life would be unsustainable if the Earth’s rotation wasn’t exactly correct. Our solar system is one of many solar systems.

Our Galaxy the Milky Way is only one of the 100 million galaxies in the universe. They are all in order and they are all precise. Instead of conflicting with one another they are swimming along in an orbit that has been set for them.

Al-Qur’an,

“Have those who disbelieved not considered that the heavens and the earth were a joined entity, and to separated them and made from water every living thing? Then will they not believe?” (Qur’an 2: 30)

Al-Qur’an,

Al-Qur’an, “Indeed, in the creation of the heavens and the earth and the alternation of the night and the day are signs for those of understanding.”(Qur’an 3: 190)

Al-Qur’an,

“And He has subjected for you the night and day and the sun and moon, and the stars are subjected by His command. Indeed in that are signs for a people who reason.”(Qur’an 16: 12)

ہر انسان کو زندگی اور کائنات کے مقصد کے بارے میں مخصوص سوالات پوچھنا قدرتی طور پر دلچسپی ہے

ہم یہاں کیا کر رہے ہیں؟

کائنات کا کیا مقصد ہے؟

زندگی کا مقصد کیا ہے؟

خالق کون ہے؟

کیا یہ سب موقع سے آیا؟

جب تک ان سوالات کا جواب نہیں دیا جاتا ہے، انسان کی روح کبھی بھی امن نہیں مل سکتی ہے اور زندگی بے معنی لگتی ہے۔ قرآن نے انسان کو زمین پر سفر کرنے کی دعوت دی ہے، خود کو مشاہدات اور تخلیق کیا گیا تھا کہ کس طرح کی عکاسی

،القرآن

کہو (اے محمد) ”زمین کے ذریعے سفر اور دیکھتے ہیں کہ کس طرح انہوں نے تخلیق شروع کیا. پھر اللہ حتمی مخلوق پیدا کرے گا بے شک خدا، ہر چیز پر، قابل ہے.” (قرآن 29: 20)

صرف ہمارے ارد گرد وسیع اور شاندار تخلیق کی عکاسی کرتے ہوئے، ہر ایک انسان بیٹھ سکتا ہے اور اس نتیجے پر آسکتا ہے کہ اس ڈیزائنر، اس شاندار کائنات میں ایک خالق ہونا ضروری ہے۔ کون کائنات تخلیق کرتے ہیں اور اس سب کو ڈیزائن کرتے ہیں؟

زمین، جس پر آپ کھڑے ہیں، حیاتیات، کیمسٹری اور طبیعیات کے قوانین میں سے ہر ایک کے بارے میں، بنیادی فورسز جیسے کشش ثقل اور اوپر کی قوت سے، جوہری اور عناصر کی ساخت میں کیا جاسکتا ہے جو زندگی کو ممکنہ طور پر مناسب بنانے کے لئے موزوں ہے؟

،زمین اور نظامِ شمسی

شمسی نظام کے اندر اندر زمین کو دیکھو، زمین کی گردش صحیح طور پر صحیح نہیں تھا تو زندگی غیر مستحکم ہوگی۔ ہمارے شمسی نظام بہت سے شمسی نظام میں سے ایک ہے۔ ہماری کہکشاں، دودھ کا راستہ کائنات میں 100 ملین کیکشاں میں سے ایک ہے۔ وہ سب ترتیب میں ہیں اور وہ بالکل درست ہیں۔

ایک دوسرے کے ساتھ متضاد ہونے کی بجائے وہ ایک ایسے مدار میں تیرا رہے ہیں جو ان کے لئے مقرر کیے گئے ہیں۔ کیا ان لوگوں نے جو کافروں کو سمجھا نہیں تھا کہ آسمانوں اور زمین میں ایک باہمی اتحاد تھی اور تم نے ان کو الگ کر دیا اور ہر زندہ چیز سے پانی بنا دیا پھر وہ یقین نہیں کریں گے؟ “(قرآن 2: 30)

،القرآن 

بے شک، آسمانوں اور زمین کی تخلیق میں اور رات اور دن کے بدلے میں تفہیم کے لئے نشانیاں ہیں.” ​​(قرآن 3: 190)

اور اس نے رات اور دن اور سورج اور چاند کا مقابلہ کیا ہے، اور تاروں کو اس کے حکم کے تابع کیا جاتا ہے

یقینا اس میں لوگوں کے لئے نشانیاں ہیں جن کا سبب ہے. “(قرآن 16: 12)

%d bloggers like this: